复兴号高铁فوشنگ ہائی سپیڈ ریلby Muhammad Haseeb

0
浙江旅行记录片by Muhammad Haseeb (محمد حسیب (سفرنامہ چےچیانگ
浙江旅行记录片by Muhammad Haseeb (محمد حسیب (سفرنامہ چےچیانگ

根据中国科学家,中国正在研制一种速度超过500公里/小时的超高速子弹头列车。张伟华教授说,为了在模拟低压环境的1500米真空管中测试不同磁悬浮模型,包括磁悬浮系统中的高温超导体,建立了“多态耦合轨道交通动态模型测试平台”。据西安交通大学科技日报报道,在2018年世界交通运输大会上,测试运行打破了声音障碍,超级列车应该能够达到每小时1,500公里的最大速度,张说。该平台可能会在今年9月获得当局的批准。完成该项目需要大约31个月的时间。根据张的说法,如果成功的话,中国将在2021年4月之前拥有超快速的磁悬浮列车。

中国已成为高速列车的主要参与者。到2017年底,中国的高速铁路延伸超过2.5万公里,占全球总数的三分之二。中国目前的子弹头列车设计时速可达350至380公里/小时,线路上的列车数量已达到5200列。根据中国中车和中国铁建的资料,中国目前正在进行技术研究,将其高速列车运行速度提高到400公里/小时。 2016年11月,正式启动了国家重点研发计划,以实现这一目标。

张说“由于诸如摩擦,受电弓和噪音之类的限制,最大可达到的速度大约为600公里,”。他认为,高速磁浮运输将成为未来铁路发展的重点。۔

فوشنگ ہائی سپیڈ ریل

چینی سائنسدانوں کے مُطابق،چین ایک انتہائی تیز رفتار بلٹ ٹرین پر کام کر رہا ہے جو ایک جیٹ ہوائی جہاز سے تیز رفتار ہے.

سائنس اور ٹیکنالوجی ڈیلی نے رپورٹ کیا کہ 19 جون 2018 ورلڈ ٹرانسمیشن کانفرنس کے دوران، جنوب مغربی چیاؤتھونگ یونیورسٹی میں.”پروفیسر ریل ٹرانزٹ متحرک ماڈل ٹیسٹنگ پلیٹ فارم” کو ایک میٹرویکیوم ٹیوب میں مختلف میگلو ماڈلوں کی آزمائش کرنے کے لئے قائم کیا گیا جس میں کم دباؤ کےتحت اجسام کو تیزی کے ساتھ حرکت دی جاتی ہے۔ جس میں ایک میگلو سسٹم میں ہائی درجہ حرارت کے سپر کاؤنڈرز شامل ہیں.

جین نے نوٹ کیا کہ ٹیسٹ رن نے آواز کی رکاوٹ کو توڑ دیا، اور سپر ٹرین فی گھنٹہ 1500 کلو میٹر تک تیز رفتار تک پہنچنے کے قابل ہوسکتی ہے.

یہ ستمبر کو اس پلیٹ فارم کی جانب سے منظور شدہ پلیٹ فارم منظور کیا جائے گا. اس منصوبے کو پورا کرنے کے لئے تقریبا 31 ماہ لگے گا. اگر ممکن ہو تو، چین کے مطابق 2021 اپریل کو چین کی تیز رفتار میگلو ٹرین چل پڑے گی.

چین ہائی سپیڈ ٹرینوں میں ایک بڑا کھلاڑی بن گیا ہے. 2017 کے اختتام تک، چین کی تیز رفتار ریلوے 25،000 کلومیٹر سے زائد کلومیٹر تک بڑھ کر دنیا بھر کے دو تہائی حصے تک پہنچ گئی. چین کی موجودہ تیزرفتار ٹرینوں کو 350 سے 380 کلو میٹر / گھنٹا کرنے کے لئے ڈیزائن کیا گیا ہے، اور لائن پر کام کرنے والی ٹرینوں کی تعداد 5،200 تک پہنچ گئی ہے.

سی آر آر سی اور چین ریلوے کی تعمیر کے مطابق، چین اس وقت تیز رفتار ٹرینوں کی آپریٹنگ رفتار کو 400 کلومیٹر / گھنٹاتک بڑھانے پر تکنیکی تحقیق کر رہا ہے. نومبر 2016 میں، ایک قومی کلیدی تحقیق اور ترقی کا پروگرام سرکاری طور پر اس مقصد کو پورا کرنے کے لئے شروع کیا گیا تھا.

چانگ نے کہا کہ “رگڑ، پینٹگراف اور شور کے طور پر رکاوٹوں کی وجہ سے، زیادہ سے زیادہ رفتار جو پہنچ سکتی ہے تقریبا 600 کلو میٹر ہے.” وہ یقین رکھتے ہیں کہ تیز رفتار  نقل و حمل مستقبل کے ریل کی ترقی کا مرکز بن جائے گا.

LEAVE A REPLY