30-member Pakistani trade mission visits Saudi Arabia to promote trade cooperationپاکستان کے 30رکنی تجارتی وفد کا سعودی عرب کا دورہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان دوطرفہ تجارت کو فروغ دینے کے امور پر تبادلہ خیال

0
پاکستان کے 30رکنی تجارتی وفد کا سعودی عرب کا دورہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان دوطرفہ تجارت کو فروغ دینے کے امور پر تبادلہ خیال

اسلام آباد ( بزنس رپورٹر) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر احمد حسن مغل سمیت پاکستان کے 30رکنی تجارتی وفد نے سعودی عرب کا دورہ کیا اور سعودی ایکسپورٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے ساتھ بلڈنگ میٹریل، تعمیراتی سامان اور فوڈ شعبوں میں دونوں ممالک کے درمیان تجارتی تعلقات کو مزید بہتر کرنے کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ وفد نے سعودی عرب کے ڈپٹی وزیر برائے توانائی، انڈسٹری اور معدنیاتی وسائل عبدالعزیز العبدالکریم اور سعودی ایکسپورٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے سیکرٹری جنرل انجینئر سالح ایس ا ل سولامی سے بھی ملاقات کی اور دونوں ممالک کے نجی شعبوں کو مزید قریب لانے کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ اس موقع پر دونوں ممالک کی تاجر برادری نے پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان گوشت، سبزیاں و پھل، ڈیری مصنوعات، بیکری کا سامان، پھلوں کے جوس و مشروبات، کوکنگ آئل، بجلی کی تاریں اور فٹنگ کا سامان، پائپ و ٹیوب، گلاس، سیرامک، پینٹ وغیرہ کے شعبوں میں ایک دوسرے کے ساتھ تجارت کو فروغ دینے کے امور پر بات چیت کی۔
پاکستانی وفد کو خوش آمدید کہتے ہوئے سعودی ایکسپورٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے سیکرٹری جنرل سالح ایس ال سولامی نے کہا کہ پاکستان کے ایک بڑے تجارتی وفد کا سعودی عرب کا دورہ اس بات کا عکاس ہے کہ پاکستان کا نجی شعبہ سعودی عرب کے ساتھ تجارتی و اقتصادی اور سرمایہ کاری تعلقات کو فروغ دینے میں گہری دلچسپی رکھتا ہے۔ انہوںنے سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان مضبوط تعلقات کی اہمیت پر روشنی ڈالی اور کہا کہ دونوں ممالک کی قیادت باہمی فائدے کیلئے ان تعلقات کو مزید مستحکم کرنا چاہتی ہے۔
یہ پہلا موقع ہے کہ پاکستان اور سعودی عرب نے بڑے پیمانے پر نجی شعبوں کے درمیان براہ راست تعلقات کو فروغ دینے کی کوشش کی ہے اور تیل کے علاوہ دیگر شعبوں میں باہمی تجارت کو بہتر کرنے میں گہری دلچسپی ظاہر کی ہے۔ پاکستان میں موجود سعودی سفارتخانے نے پاکستان کے تجارتی وفد کو سعودی عرب کا دورہ کرنے میں ہر ممکن سہولت فراہم کی ہے۔
اس موقع پر اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ایک وفد نے چیمبر کے صدر احمد حسن مغل کی قیادت میں جدہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا بھی دورہ کیا اور جدہ چیمبر کے وائس چیئرمین شیخ مازن ال بیٹرجی سمیت سعودی ہم منصبوں کے ساتھ ملاقات کی۔شیخ مازن ال بیٹرجی نے اسلام آباد چیمبر آف کامرس کے وفد کا پرتپاک استقبال کیا اور اس بات پر زور دیا کہ دونوں ممالک باقاعدگی کے ساتھ تجارتی وفود کا تبادلہ کرنے پر توجہ دیں جس سے باہمی تجارت مزید بہتر ہو گی۔ انہوںنے یقین دہانی کرائی کہ جدہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری پاکستان کی تاجر برادری کو سعودی عرب کا دورہ کرنے میں تعاون کرے گا اور کسٹم معاملات سمیت دیگر تجارتی رکاوٹوں کو دور کرنے کی کوششوں میں ہر ممکن مدد کرے گا تا کہ سعودی عرب اور پاکستان کے درمیان تجارتی تعلقات کو مزید تقویت ملے۔
اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر احمد حسن مغل نے اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان تاریخی عمدہ تعلقات پائے جاتے ہیں لہذا ضرورت ا س بات کی ہے کہ ان تعلقات سے استفادہ حاصل کرتے ہوئے دونوں ممالک معاشی شعبے میں مزید قریبی تعاون بڑھائیں۔ انہوں نے کہا کہ دونوں چیمبرز پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان باہمی تجارت و سرمایہ کاری کو فروغ دینے کیلئے کوششیں تیز کریں جس سے دونوں ممالک کیلئے فائدہ مند نتائج برآمد ہوں گے۔ اس موقع پر اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے جدہ چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ساتھ ایک مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے جس کے تحت دونوں چیمبرز پاکستان اور سعودی عرب کے نجی شعبوں کے درمیان مضبوط روابط قائم کرنے اور کاروباری تعلقات کو بہتر کرنے کے نئے مواقع تلاش کرنے کی مشترکہ کوششیں کریں گے۔

Islamabad (   Business Reporter   ) A 30 member Pakistani trade mission including Ahmed Hassan Moughal, President, Islamabad Chamber of Commerce & Industry visited Saudi Export Development Authority (SEDA)t and held productive B2B meetings with Saudi counterparts to explore prospects for enhancing Pak-Saudi bilateral trade and investment cooperation, particularly in building material/construction and food sectors.

 

The Pakistani delegation met with Deputy Minister of Energy, Industry and Mineral Resources Abdul Aziz Al-Abdulkarim and Eng. Saleh S. Al-Solamim Secretary General, Saudi Export Development Authority (SEDA). Both sides held fruitful meetings and discussed the prospects for enhancing bilateral trade between Pakistan and Saudi Arabia in non-oil products including meat products, fruits and vegetables, dairy products, bakery & confectionary, fruit juices & beverages, cooking oil & fats, electric wires & fittings, pipes & tubes, glass & ceramics, paints & dyes.

Welcoming the Pakistani trade mission, Saleh S. Al-Solami, Secretary General SEDA said that visit of Pakistani entrepreneurs to Saudi Arabia reflected their keen desire for enhancing trade, economic and investment cooperation between Saudi Arabia and Pakistan. He also highlighted the strong relationship between the two countries and said the leaders of both countries were keen to consolidate this relationship for mutual benefit.

It was for the first time that Pakistan and Saudi Arabia engaged their private sectors at broader level to enhance bilateral trade in non-oil products. The Royal Embassy of Saudi Arabia in Pakistan extended facilitation to the Pakistani delegation in visiting Saudi Arabia.

The ICCI delegation led by Ahmed Hassan Moughal President also visited Jeddah Chamber of Commerce & Industry (JCCI) and held meeting with Saudi entrepreneurs. Sheikh Mazen Al Batterji Vice Chairman Jeddah Chamber of Commerce & Industry welcomed the ICCI delegation and stressed for regular exchange of trade missions between Saudi Arabia and Pakistan to explore untapped areas of potential cooperation between the two countries. He said JCCI would facilitate Pakistani entrepreneurs during their visit to Saudi Arabia. He said JCCI would also help in resolving customs issues and trade barriers to further improve Pak-Saudi trade relations.

Ahmed Hassan Moughal, President, ICCI said that both Chambers should work together for trade and investment facilitation between Pakistan and Saudi Arabia. ICCI also signed an MoU with JCCI to facilitate frequent interaction between the private sectors and further improve trade cooperation between the two countries.

LEAVE A REPLY