FJWU Organized Workshop on “Wireless Communication Technologies in IOT”فاطمہ جناح یونیورسٹی میں’’ وائرلیس کمیونیکیشن ٹیکنالوجی اِن آئی۔ او۔ ٹی ‘‘ ورکشاپ کا انعقاد

0
Group photo at the end of workshop.

Rawalpindi   – Staff Reporter:  Department of Software Engineering, FJWU in collaboration with the Pakistan Engineering Council and the IEEE FJWU student branch organized a CPD workshop on“Wireless Communication Technologies in IOT”, Resource person of the workshop was Dr. Syed Ali Hassan and he is working as an Associate Professor at the School of Electrical Engineering and Computer Science (SEECS), NUST, where he is heading the IPT research group, which focuses on various aspects of theoretical communications.

He talked about wireless communication theory, signal processing theory,Applied Mathematics, modes of communication, FAB (Frequency Allocation Board) in Pakistan, digital communication, SMS services, CDMA (Code Division Multiple Access) andbrieflyexplains these topics and while talking about wireless technologies said up till now there are four technologies we have made progress in: i.e. 1G, 2G, 3G and 4G. The technology which we are anticipating in 2020 is 5G lots of work is been done but much more to go.

Chief Guest of the workshop was HOD Miss Mehreensirshar,she said thanks to Dr. Syed Ali Hassan for his precious time and insight on the subject and also presented souvenir tohim.

راولپنڈی : سٹاف رپورٹر فاطمہ جناح وویمن یونیورسٹی کے ڈیپاٹمنٹ سوفٹ وئیر انجینئرنگ اور پاکستان انجینئرنگ کونسل کے تعاون سے ’’وائرلیس کمیونیکیشن ٹیکنالوجی اِن آئی۔ او۔ ٹی‘‘ ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا۔
ورکشاپ کے ریسورس پرسن الیکٹریکل انجینئرنگ اور کمپیوٹر سائنس ، نسٹ میں ایسوسی ایٹ پروفیسر ڈاکٹر سید علی حسن تھے یہ آئی پی ٹی ریسرچ گروپ کے سربراہ اور نظریاتی مواصلات کے مختلف پہلوؤں پرریسرچ کررہے ہے۔ جنہوں نے وائرلیس مواصلاتی نظریہ، سگنل پروسیسنک نظریہ، اور ایپلائیڈ ریاضی، مواصلات کے طریقے، پاکستانی فریکونینسی الاؤنس ، ڈیجیٹل کمیونیکیشن ، ایس ایم ایس سروسز کے بارے میں بات کی اور وائرلیس کمیونیکیشن ٹیکنالوجی کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ ابھی تک ہم نے چار ٹیکنالوجیز میں ترقی کی ہیں جس میں 1جی، 2 جی 3 ،جی، 4 جی ہیں لیکن ہم اب 5 جی کو 2020 میں پیش کریں گے جس سے متعلق کچھ کام ہو چکا ہے اور بہت سا کام رہتا ہے۔

سوفٹ وئیر انجینئرنگ طالب علموں نے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایسی ورکشاپ ہوتی رہنی چاہیے جس میں ہم تجربہ کار افراد سے بہترین آگاہی حاصل کرسکتے ہیں۔

ڈین آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی پروفیسرڈاکٹر عزیرہ رفیق نے کہا کہ ہماری یونیورسٹی اپنی طالبات کو عملی تربیت اور ز مانے کے سا تھ چلنے کے لئے مواقع مہیا کرتی رہی ہے اور کرتی رہے گی، تا کہ طالبات آ گے چل کر ملک و قوم کی تر قی میں بھر پور کردار ادا کر سکیں ۔آخر میں ڈین آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی پروفیسرڈاکٹر عزیرہ رفیق نے ڈاکٹر سید علی حسن کا شکریہ ادا کیااور یونیورسٹی سونئیر پیش کیا

LEAVE A REPLY