چکری کے چوہدری ٹیکسلہ کے خان دھمیال کے راجگان کیا یہ ہے نیا پاکستان

0
Rajab Ali Raja
حلقہ این اے 59 بنا منی کراچی بن گیا
سیاست دان اور انتظامیہ حالات سے بے خبر
وزیر اعظم پاکستان عمران خان  وزیر ہوا بازی غلام سرور خان اور وزیر قانون پنجاب راجا بشارت حلقہ NA59کو منی پاکستان بننے سے بچائیں
حلقہ این اے 59 پی پی 12 سیاسی یتیم حلقہ تیس تیس سال اور چالیس چالیس سال حکمرانی کرنے والے حکمران عوامی مسائل سے بلکل نا واقف  ہم عوام اس امید پر ہر بار ان سیاست دانوں کو منتخب کرتے ہیں کے شاید اس دفعہ ہمیں وہ تمام سہولیات مل سکیں جن کے ہم خواب عرصہ40سال سے دیکھ رہے ہیں۔سیاست دان اگلے الیکشن کے بارے میں سوچتا ہے جبکہ لیڈر  حلقے کےمستقبل کے بارے میں  اس حلقے کی کم ظرفی یا اعلی ظرفی اس کا فیصلہ میرے معزز قارین کرام  کالم کے مطالعہ  کے بعد خود کریں گے  چالیس سال سے ہمارے علاقے میں کوئی صنعتی یونٹ نہیں بنا جہاں پر روزگار کے مواقع پیدا ہوئے ہوں اور ہمارے پانچ سو ہزار بندےکو نوکریاں ملی ہوں یا پھر  کوئی ایسا ٹیکنیکل انسٹیوٹ نہیں بنا جس سے نوجوانوں کو ہنر سکھایا جاتا ہو اور اس ادارے نے پانچ سو ہزار نوجوانوں کو ہنر کی دولت دی ہو اور میرا نوجوان اس سے مستفید ہو کر اپنے خاندان کی پرورش کرنے کے قابل ہوا ہو سننے میں آیا تھا چکری ٹیکنیکل انسٹیوٹ سرور خان صاحب  نے بنایا تھا لیکن میری معلومات کے مطابق وہ بھی شدید خستہ حالی کا شکار ہے  اس حلقہ میں کوئی بڑا ہسپتال نہیں بنا جس میں لوگوں کوصحت کی سہولیات مل سکے نوجوانوں کے لیے کوئی گراونڈ نہیں جہاں ہماری نوجوان نسل اپنے آپ کو مصروف رکھے اور بری عادتوں سے محفوظ رہے ہماری 50فیصد نوجوان منشیات کے عادی بنے ہوئے ہیں جبکہ 40فیصدکے قریب بےروزگاری کا شکار صرف 10فیصد چھوٹے موٹے روزگار یا اپنے کام میں مصروف ہیں۔ شاہد یہ ہی بنیادی وجہ ہے چوری اور ڈکیتی کی بڑھتی ہوئی واردتوں کی چکری روڈ پر یونیورسٹی جو کے ق لیگ کے دور کی منظوری کے بعد
سے بن رہی ہے لیکن ہمارے سیاست دانوں کی عدم دلچسپی کی بدولت بارہ سال سے تکمیل کے مراحل طے نہ کر پائی ہمارے  سیاست دانوں کی حلقے سے دلچسپی کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کے حلقہ این اے 59منی کراچی کا منظر پیش کرنے لگا  ادارے بھتہ مافیا بن کر روڈ پرکھڑی ریڑھیوں سے پانچ سو ہزار روپے منتھلی لینے لگے  جس کی وجہ سے چکری روڈ اڈیالہ روڈ جام رہنامعمول بن گیاجبکہ چوری ڈکیتی کی ڈیڑھ سال میں سینکڑوں کیس سامنے آ چکے لیکن پولیس کی  کارکردگی زیرو بٹا زیرو  جنوری 2020کے پہلے بیس دنوں میں درجن سے زیادہ ڈکیتی  اور چوری کی واردتوں رپورٹ دھمیال گاوں اور چکری روڈ پر ڈاکو سر عام گھومنے لگے اور لوگوں کو لوٹنے کا عمل دن رات جاری مزمت کرنے پر ڈاکو سرعام گولیاں چلاتے ہیں جس کی وجہ سے گزشتہ تین سالوں میں  درجن سے زیادہ لوگ زخمی اور قتل ہوئے حلقے کے سیاست دان ایسی کاروائی سے بالکل نا واقف لوگ لٹنے لگے اہلیان حلقہ میں شدید تشویش لاحق پولیس خاموش تماشائی بن گے  وزیر ہوا بازی غلام سرور خان اپنے حلقہ کو منی کراچی بننے سے بچائیں چوہدری نثار علی خان 2018کے الیکشن میں عوام کے ہاتھوں بری شکست کھانے کے بعد شدید ڈپریشن کا شکار اور تاحال  اپنے حلقے کی سیاست علاقے کے مسائل سے بلکل بے خبر خاموشی کی زندگی گزارنے پر مجبور ابھی جبکہ ذرایع کے مطابق آب کوئی پنجاب کی وزارت لینے کے خواہش مند ہیں  جبکہ راجگان دھمیال محمد بشارت راجا اپنے گاوں اور حلقے کو چھوڑ کر کینٹ کی خدمت میں مصروف شاہد یہ ہی وجہ ہےکے دھمیال ہاوس کے دروازے دھمیال کے لوگوں کے لیے بند عوام دھمیال اپنوں سے  شدید مایوس جبکہ کینٹ اور عام عوام کے لیے  دھمیال ہاوس کھلا ہیے اہلیان حلقہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان وزیر ہوا بازی غلام سرور خان اور وزیر قانون پنجاب محمد بشارت راجا سے درخواست کرتے ہیں اپ کا حلقہ نہیں لیکن پنجاب کا حصہ ہونے پر حلقہ این اے 59کو منی کراچی بننے سے بچائیں۔

LEAVE A REPLY